بلاگصحت

وزن کم کرنے کا بہترین طریقہ خوراک کی تبدیلی، مگراسے کس طرح اختیار کیا جائے

ایک رپورٹ کے مطابق کچھ لوگ وزن کم کرنے کے لیے کھانا ترک کردیتے ہیں حالانکہ انہیں کھانے کو ترک کرنے کے لیے روزمرہ کے کھانے میں تبدیلی سے وزن کم کرنے میں مدد مل سکتی ہے۔

عرب میڈیا کے مطابق صحت کے حوالے سے معلومات شائع کرنے والی ویب سائٹ کی طرف سے جاری رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جب ناشتے کی بات آتی ہے تو ان کی غذائی خصوصیات کی وجہ سے یونانی دہی اور گری دار میوے جیسے کھانے کی بہت زیادہ تجویزدی جاتی ہے۔

یونانی دہی اور گری دار میوے کھانے سے پیٹ زیادہ دیر تک بھرے رہنے کا احساس رہتا ہے اور کھانے کی اشتہا کو کم کرنے میں مدد ملتی ہے، اس کی وجہ ان میں موجود پروٹین کی وافر مقدارہے۔

غذائیت کی ماہر اینا ریسڈورف نے کہا کہ یونانی دہی کو شامل کرنے سے اس میں پروٹین کی مقدار زیادہ ہونے کی وجہ سے وزن کم کرنے میں مدد مل سکتی ہے، پروٹین بھوک کے احساس کو کم کرتی ہے اور دیر تک پیٹ کے بھرے رہنے کا احساس دلاتی ہے، اس سے مجموعی کیلوریز کو کم کیا جا سکتا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ یونانی دہی "کیلشیم اور پروبائیوٹکس کا ایک اچھا ذریعہ ہے جو چربی کو کم کرنے اور آنتوں کی صحت کو بہتر بنانے میں مدد کر سکتا ہے، اس کی وجہ یہ ہے کہ کم چکنائی والے یونانی دہی میں روایتی دہی کے مقابلے میں دگنا پروٹین ہوتا ہے۔

امریکن جرنل آف کلینیکل نیوٹریشن میں شائع ہونے والی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ ان ذرائع سے پروٹین کھانا دن بھر زیادہ کیلوری جلانے میں مدد کرتا ہے ، یہ ورزش کے دوران جسم کو میٹابولک فائدہ بھی دیتا ہے نیز یہ آرام کے دوران زیادہ وزن کم کر سکتا ہے۔

صحت کی ایک ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق ماہرین نے کہا کہ بڑی مقدار میں پروٹین کھانے سے جسم روزانہ 80 سے 100 اضافی کیلوریز جلا سکتا ہے، جیسا کہ ایک تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ پروٹین کی زیادہ خوراک کے دوران 260 کیلوریز کا اضافہ ہوتا ہے۔

دہی میں پروٹین کی مقدار زیادہ ہونے کے باوجود یہ خود سے زیادہ کیلوریز جلانے کا امکان نہیں رکھتا، لہٰذا دہی کو متوازن غذا کے حصے کے طور پر کھانے سے جس میں ریشے دار کاربوہائیڈریٹس اور صحت مند چکنائی شامل ہوتی ہےجس سے وزن میں کمی اور میٹابولزم کو فروغ دینے کا امکان ہے۔

وزن میں کمی کے لیے ایک اور انتہائی تجویز کردہ غذا گری دار میوے ہیں، جو چربی کی مقدار کے ساتھ بہت زیادہ غذائیت سے بھرپور ہوتے ہیں۔

ماہرین صحت کے مطابق گری دار میوے وزن کم کرنے میں مدد کر سکتے ہی ، کیونکہ وہ پروٹین اور فائبر سے بھی بھرپور ہوتے ہیں، کھانے کے بعد مکمل غذائیت آپ کو کم کھانے میں مدد دے سکتی ہے۔

گری دار میوے کا گلائیسیمک اثر بھی کم ہوتا ہے، جو خون میں شکر کی سطح کو مستحکم کرنے میں مدد کرتا ہے۔

یونانی دہی اور گری دار میوے میں چکنائی کی مقدار زیادہ ہونے کی وجہ سے آپ کو انہیں اعتدال میں کھانا چاہیے، کیونکہ ان میں سے بہت زیادہ کھانے سے وزن بڑھ سکتا ہے اگر ان کی مقدار کو سختی سے کنٹرول نہ کیا جائے۔

ماہرین نے صحت مند وزن کو سہارا دینے کے لیے پانی جیسے دیگر عناصر کی اہمیت پر بھی زور دیا ہے، ان کا خیال ہے کہ مناسب مقدار میں پانی پیے بغیر جسم ذخیرہ شدہ چربی کو میٹابولائز نہیں کر سکتا، جس کی وجہ سے وزن میں اضافے کو بعض اوقات پانی کی کمی کی علامت سے تعبیر کیا جاتا ہے۔

آپ کا ردعمل کیا ہے؟

متعلقہ اشاعت

Qalam Kahani We would like to show you notifications for the latest news and updates.
Dismiss
Allow Notifications