بین الاقوامیخبریںدلچسپ و عجیبویڈیوز

ایفل ٹاور سوشل میڈیا پر کیوں ٹرینڈ کر رہا ہے، وائرل ویڈیو کی حقیقت سامنے آگئی

فرانس کا مشہور زمانہ ایفل ٹاور سوشل میڈیا پر اس وقت ٹرینڈ کرنے لگا جب اسے آگ لگنے کی خبریں سامنے آئیں جس سے سیاحوں سمیت دنیا بھر کے عام لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا۔

تاہم اب اس وائرل ویڈیو کی حقیقت سامنے آگئی ہے جس کے مطابق مذکورہ ویڈیو اصلی نہیں بلکہ مصنوعی ذہانت کا کمال ہے۔
 

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق پیرس کے فائر فائٹرز کو ایفل ٹاور میں آگ لگنے کی کوئی اطلاع موصول نہیں ہوئی ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ ٹک ٹاک ویڈیوز مصنوعی ذہانت کے ذریعے بنائی گئی ہے، ایفل ٹاور کو کوئی نقصان نہیں پہنچا ہے۔

اس کے علاوہ ایفل ٹاور کے آفیشل سوشل میڈیا پلیٹ فارمز پر بھی ایسی کوئی خبر نہیں دیکھی گئی۔

واضح رہے کہ وائرل ویڈیو کی حقیقت سامنے آنے کے بعد مذکورہ ویڈیو کو ٹک ٹاک سے ہٹادیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ اس تاریخی ٹاور کی تعمیر کا آغاز جنوری 1887 میں ہوا تھا جبکہ مارچ 1889 میں اس کی تکمیل ہوئی، 1889 میں ہی ہونے والے ورلڈ فیئر میں اسے دیکھنے تقریباً دو ملین سیاح آئے تھے۔

آپ کا ردعمل کیا ہے؟

متعلقہ اشاعت

Qalam Kahani We would like to show you notifications for the latest news and updates.
Dismiss
Allow Notifications